طیبہ تشدد کیس ؛ اسلام آباد ہائی کورٹ نے والدین اور ملزمان کا صلح نامہ مسترد کردیا

اسلام آباد: 

ہائی کورٹ نے گھریلو تشدد کا شکار بننے والی کمسن ملازمہ طیبہ کے والدین اور ملزمان کے درمیان صلح نامہ مسترد کرتے ہوئے ملزمان پر فرد جرم عائد کردی ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں جسٹس محسن اختر کیانی نے طیبہ تشدد کیس کی سماعت کی، عدالت نے گھریلو تشدد کا شکار بننے والی کمسن ملازمہ طیبہ کے والدین اور ملزمان کے درمیان صلح نامہ مسترد کرتے ہوئے مقدمے میں نامزد راجا خرم علی اور اہلیہ ماہین ظفر پر فرد جرم عائد کردی تاہم دونوں ملزمان نے صحت جرم سے انکار کردیا جس پر عدالت نے 19مئی کو گواہوں کو طلب کرلیا ہے۔

Comments

comments

Share

Pin It

Comments are closed.